Tuesday, 21 May 2013

A Poem by Dagh Dehlavi

Dagh Dehlavi Verses for his famous poem.

My beloved kills me and ask everybody.
Who is responsible who did it killed.

Do you remember my beloved you once promised
Will stand by with me for ever every where.

Thousand of people meet and see you
But I was the one who been destroyed

وہ قتل کرکے مجھے ہر کسی سے پوچھتے ہیں
یہ کام کس نے کیا، یہ کام کس کا تھا

وفا کرے گے نبھاے گےبات مانے گے
تمھیں بھی یاد ہو کچھ یہ کلام کس کا تھا

اگر چہ دیکھنے والے تیرے ہزاروں تھے
تباہ حال بہت زیر بام کس کا تھا

ہر ایک سے کہتے ہیں کیاداغ بے وفا نکلا
یہ پوچھے ان سے کویٴیہ کلام کس کاتھا

داغ دھلوی کا کلام

No comments:

Post a Comment