Wednesday, 28 January 2015

Pictures of Nawab of Dir Darbar.

Some historical pictures of  of Nawab-E- Dir ( Duke of Dir princely state). Dir Was princely state before 1969 rulled by Lords whose Last one was Nawab Shah Jehan نواب شاہ جہان.
Nawab Dir Nawab Shah Jehan out for Hunting. 

He was said to be cruel man who dismantled the lives of the locals. He used to send his men to all the villages to collect illegal taxes from the poor people of the states.
Nawabi Dir with Political agent and Shahbu Din Khan of Jandul, a picture of the old days.

A picture of Darbar of Nawab Dir in Dir Upper to conduct a Jirga.

دیرکا نواب شاہ جہاں
تاریخ اس بات پر مظہر ہے کہ نواب شاہ جہان ایک انتہائی ظالم شخص تھا اس نے اپنے قوم کا جینا حرام کر رکھا تھا۔کہا جاتا ہے کہ کچھ دنوں کے بعد اپنے نوکر بھیجواتا تھا اور ہر گھر سے گھی مرغے اور لکڑیاں وغیرہ جیسے چیزیں لیتا تھا۔اور کسی کے پاس قلم نہیں رہنے دیتا تھا۔اس نے دیر کے لوگوں کو علم سے دور رکھا ورنہ پورے پاکستان میں دیر والوں جیسے ذہین لوگ بہت کم پائے جاتے ہیں۔نواب شاہ جہان نے دیر کے لوگوں کو اس ڈر کی وجہ سے علم سے دور رکھا کہ وہ یہ سمجھتا تھا کہ اگر یہ لوگ پڑھ لکھیں گے تو میری نوابی چین لی جائی گی۔
Jirga For Peace After Too Many Battles Between Swat And Dir In 1937. 
نوابیت کا خاتمہ اور اہل دیر کا پاکستان میں شامل ہوجانا
جیسے کہ دیر کے لوگ میں آزادی کا ایک جزبہ تھا وہ ظالم نواب سے نجات چاہتے تھے اور ویسے بھی انکا پاکستان میں شمولیت کا ایک جزبہ تھا۔اسلئے دیر کے کچھ سرداروں1969میں راتوں رات صدر مملکت پاکستان ایوب خان کے پاس گئے اور درخواست پیش کی کہ دیر کو پاکستان میں شامل کیا جائے تب پاکستانی گورنمنٹ نے دیر پر اپنا قبضہ جمایا اور نوب شاہ جہاں کو گرفتار کرکے ہالی کاپٹر میں لے گئے۔دیر کی رہنے والی ایک خاتون کا بیان ہے کہ جب نواب شاہ جہان کو ل کر گئے تب اور ہالی کاپٹریں آئے اور بے شمار چھیٹیاں(پیغامات) کے کاغذ نیچے پھینکے جس میں بہت سی بات لکھی ہوئی تھی جن میں یہ بھی تھا کہ آج سے آپ لوگ آزاد ہو اور پاکستان کا گورنمنٹ یہاں پر سکول اور دیگر سہولیات فراہم کرے گا۔تو اسی طرح دیر آزاد مملکت پاکستان کا ایک بہت اہم حصہ بن گیا۔
Cabinet of Nawab of Dir (Dir Princely State)

 A picture Of Militia of Princely state Dir
 Nawab Shah Jehan with His family.

Pashto Times. 

4 comments:

  1. Hello,

    We would be interested in using some the pictures that are in this article.
    Is there a way to contact you.

    Thank you

    ReplyDelete
    Replies
    1. Yes Sure Your Email Address Please

      Delete
  2. i am interested to provide us more information about Dir Nawab and his picture and his family i am also belong to Bajaur Agency and there was also ruled a Nawab of khar for long time

    ReplyDelete
  3. Assalamulaikum!
    Thanks for the amazing information above. Do you have any more pictures of "Hazrat Said Akhunzada"? he was my great grand father. if there are any how can I get them.
    My email is younus.said@gmail.com Thanks.

    Regards

    ReplyDelete